Thursday , August 11 2022
Home / Archive / زوہا باسط 8th in Punjab, PMS 2020-21

زوہا باسط 8th in Punjab, PMS 2020-21

Listen to this article

زوہا باسط

8th in Punjab, PMS 2020-21

ورلڈ ٹائمز میگزین اپنے قارئین کو تازہ ترین اہم ایشوز پر انتہائی جامع مواد فراہم کرتا ہے جو کہ کرنٹ افیئرز کی تیاری میں کلیدی اہمیت کا حامل رہتا ہے۔

جہانگیر ورلڈ ٹائمز: سب سے پہلے آپ ورلڈ ٹائمز کے قارئین کے لیے اپنے تعلیمی کریئر بارے کچھ بتائیں۔
زوہا باسط: میری ابتدائی تعلیم ایک سرکاری سکول سے ہوئی جس کے بعد میں نے گورنمنٹ اسلامیہ کالج لاہور کینٹ سے انٹرمیڈیٹ اور گریجوایشن کی تعلیم مکمل کی۔ پھرمیں نے پنجاب یونیورسٹی لاہور سے بائیو کیمسٹری میں ماسٹرز اور ایم فل کی ڈگریاں حاصل کیں۔ میں شروع سے ہی میرٹ کی بنیاد پر ملنے والے سکالرشپ حاصل کرتی رہی ہوں جب کہ ایم فل ڈگری میں گولڈ میڈل بھی حاصل کر رکھا ہے۔ آج کل میں پنجاب یونیورسٹی ہی سے بائیولوجیکل سائنسز میں پی ایچ ڈی کر رہی ہوں۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: ورلڈ ٹائمز میگزین PMS امتحان کی تیاری میں آپ کے لیے کس حد تک مددگار رہا؟
زوہا باسط: ورلڈ ٹائمز میگزین اپنے قارئین کو تازہ ترین اہم ایشوز پر انتہائی جامع مواد فراہم کرتا ہے جو کہ کرنٹ افیئرز کی تیاری میں کلیدی اہمیت کا حامل رہتا ہے۔ اِس کی بدولت آپ کو پاکستان اور عالمی سطح پر ہونے والی تازہ ترین تبدیلیوں اور پیش رفت کا علم رہتا ہے۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: PMS کے لازمی مضامین خصوصاً جنرل نالج (General Knowledge) پیپر میں کامیابی کے لیے کیا حکمت عملی اپنائی جانی چاہیے؟
سدرہ ستار:محنت، محنت اور بس محنت کرتے جائیں خاص طور سے Essayاور Précis پیپر کے لیے۔ سب سے پہلے تو سابقہ سالوں کا گہرائی سے مطالعہ کیجیے تاکہ آپ یہ جان سکیں کہ ٹرینڈ آخر کس بلا کا نام ہے۔ پھر اِس کی روشنی میں پاکستان افیئرز کے تمام اہم موضوعات کی ایک فہرست بنا لیں تاکہ آگے چل کر سابقہ پیپرز کی روشنی میں اُن کی تیاری کی جا سکے۔ کرنٹ افیئرز اور تازہ ترین اعدادوشمار سے باخبر رہنے کے لیے اخبارات خصوصاً ڈان اور دی نیوز میں شائع ہونے والے مضامین کا مطالعہ کرنے کی عادت ڈال لیں۔ اِس سے آپ کو جنرل نالج پیپر میںبھی کافی مدد حاصل ہو گی۔ انٹرنیٹ پر دستیاب مختلف آن لائن کوئز میں روزانہ کی بنیاد پر شریک ہوتے رہیں۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: PMS کے تحریری امتحان میں اچھے نمبر حاصل کرنے کے لیے کیا سٹریٹجی کارآمد ہو سکتی ہے؟
زوہا باسط: سب سے پہلے تو اِدھر اُدھر بھٹکنے کے بجائے یہ سمجھیں کہ ایگزامینر پوچھ کیا رہا ہے کیوں کہ یہ کامیاب ہونے کے لیے انتہائی ضروری ہے۔ آپ کا جواب سوال کے عین مطابق ہونا چاہیے اور اِسے تحریری کرتے ہوئے ہیڈنگز اور سب ہیڈنگز کا استعمال بھی کریں۔ اپنے دلائل کی سپورٹ میں مستند اعدادوشمار بھی Quoteکریں جب کہ ڈایاگرامز، اور فلوچارٹس کا استعمال بھی اہم ہے۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: Essay پیپر کے لیے آپ کی سٹریٹجی کیا تھیـ؟
زوہا باسط: Essayکے لیے پہلے میں نے ایک جامع آؤٹ لائن تحریر کی اور مین باڈی کے ہر پیراگراف میں ایک Topic sentenceدیا پھر اُس کی سپورٹ میں چند جملے تحریر کرنے کے بعد پیراگراف کا اختتامی جملہ لکھا۔ میری رائے میں آپ اپنے Essayمیں مزید نکھار لانے کے لیے اِس میں مختلف حوالہ جات اور اعدادوشمار بخوبی استعمال کرنے کا فن بھی آنا چاہیے۔ مشکل الفاظ لکھنے کے بجائے گریمر کے لحاظ سے درست جملے لکھنے پر توجہ مرکوز کریں۔ غیر ضروری اور غیر متعلقہ مواد لکھنے سے اجتناب برتیں کہ یہ آپ کی کامیابی کے امکانات کو گہنا سکتا ہے۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز:آپ Zoology اور Chemistry میں انتہائی شاندار نمبر حاصل کیے ہیں۔ اِس کے لیے آپ کی سٹریٹجی کیا تھیـ؟
زوہا باسط: میں نے کمیشن کی جانب سے تجویز کردہ کتب کا مطالعہ کیا اور خاص طور پر کیمسٹری کی بہت مشق کی کیوں کہ یہ اگرچہ ایک مشکل مضمون ہے تاہم اِس میں بہت شاندار سکور حاصل کیا جا سکتا ہے۔ اِن دونوں مضامین میں میں نے مختلف اشکال اور فلوچارٹس کا استعمال کیا۔ آپشنل مضامین کے لیے میں یہ ضرور کہوں گی کہ سلیبس کا مکمل احاطہ کریں اور کوشش کریں کہ کوئی بھی حصہ یا موضوع بغیر پڑھے نہ رہ جائے۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: کسی سوال کا متاثر کن اور اچھے نمبر دینے والا جواب کتنے صفحات پر مشتمل ہونا چاہیے؟
زوہا باسط: آپ کا جواب ایسا ہونا چاہیے کہ وہ پوچھے گئے سوال کے مختلف پہلوؤں اور اُس کے تقاضوں پر پورا اُترتا ہو۔ الفاظ یا صفحات کی تعداد کے بجائے جواب کا معیار بہتر بنانے پر توجہ دیں۔ اصل میں جو چیز آپ کے جواب کی حد کا تعین کر سکتی ہے وہ صرف دستیاب وقت ہے اور اِسی وقت کا بہتر استعمال بھرپور توجہ اور عقل مندی کا متقاضی ہے۔ اگر آپ ہر جواب کو کم وبیش ایک سا وقت دیں گے تو اِس سے آپ کے جوابات میں توازن قائم رکھنے میں آسانی رہے گی۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: آپ کے خیال میں اختیاری مضامین کے پیپرز کے لیے اُمیدوار کو اُردو میں لکھنا چاہیے یا میڈیم صرف انگریزی ہی ہونا چاہیے؟
زوہا باسط: یہ دراصل اِس بات پر منحصر ہے کہ آپ کو کس زبان پر کتنا عبور حاصل ہے۔ تاہم آپ اِس حقیقت کو بھی نظرانداز نہیں کر سکتے کہ مارکیٹ میں PMSکے مضامین سے متعلق اردو زبان میں لکھی گئی کتب کی تعداد نہ ہونے کے برابر ہے۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: آپ کے خیال میں اختیاری مضامین کا انتخاب کرتے ہوئے کن عوامل کو مدنظر رکھنا چاہیے؟
زوہا باسط: سب سے پہلے تو آپ اپنی ذاتی دلچسپی اور تعلیمی بیک گراؤنڈ کو پیش نظر رکھیں۔ پھر سلیبس کے ساتھ ساتھ سابقہ سالوں کے پیپرز کا بھی گہرائی سے جائزہ لیں۔ ا،س کے ساتھ ساتھ سکورنگ ٹریند کا عنصر بھی ذہن میں رکھیں۔ میری نظر میں سائنس کے مضامین سکورنگ ہیں تاہم یہ کلی طور پر آپ کے بیک گراؤنڈ اور دلچسپی پر منحصر ہے کہ آپ کیا انتخاب کرتے ہیں۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز: آپ کی کامیابی کا کریڈٹ کس کو جاتا ہے؟
زوہا باسط: میری کامیابی کا اصل کریڈٹ میری والدہ کو جاتا ہے کہ جنھوں نے مجھے تمام مشکلات اور مسائل کے سامنے عزم اور حوصلے سے کھڑا ہونا سکھایا۔
جہانگیر ورلڈ ٹائمز : عام تاثر یہ ہے کہ انٹریو میں پینل ارکان کا رویہ کافی سخت ہوتا ہے اور بعض اوقات قدرے سخت اور مشکل سوالات بھی پوچھتے ہیں، آپ نےاِس صورت حال کا سامنا کیسے کیا؟
زوہا باسط: انٹرویو پینل کے ارکان کا رویہ خاصا مشفقانہ تھا۔ میں نے مختصر مگر سوالات کے عین مطابق جوابات دیے۔ جب مجھے مختلف ایشوز پر اپنا ذاتی تجزیہ پیش کرنے کو کہا گیا تو ایسا کرتے ہوئے میں نے اپنا اعتماد پوری طرح بحال رکھا۔
اختیاری مضامین کا انتخاب
i۔ آپ کا تعلیمی پس منظر
ii۔ ذاتی دلچسپی
iii۔ سکورنگ ٹرینڈ

For Magazine Subscription Please visit our Facebook Page or WhatsApp on 0302 5556802

For Institute’s Information, please join our Facebook Page or you can contact us on 0302 5556805/06/07

For Books Order please Visit our Facebook Page or WhatsApp us on 0302 5556809

You can follow us on Twitter too

 

Check Also

In Conversation with Shahzaib Mushtaq (PSP) 9th in Pakistan

Listen to this article In Conversation with Shahzaib Mushtaq (PSP) 9th in Pakistan 1st in …

Leave a Reply

%d bloggers like this: